مردہ دفن کرنا کوّے نے سکھایا :

جب قابیل نے ہابیل کو قتل کر دیا تو چونکہ اس سے پہلے کوٸی آدمی مرا ہی نہیں تھا اس لیے قابیل حیران تھا کہ بھاٸی کی لاش کو کیا کروں چنانچہ کٸی دنوں تک وہ بھاٸی کی لاش کو اپنی پیٹھ پر لادے پھرتا رہا پھر اس نے دیکھا کہ دو کوّے آپس میں لڑے اور ایک کوّے نے دوسرے کوّے کو مار ڈالا پھر زندہ کوّے نے اپنی چونچ اور پنجوں سے زمین کرید کر ایک گڑھا کھودا اور مرے ہوۓ کوّے کو ڈال کر مٹی سے دبا دیا 

Crow-teaching-for-human-kawaii-ne-murda-dafan-karna-sikhaya
 Crow teaching for human kawaii ne murda dafan karna sikhaya 

یہ منظر دیکھ کر قابیل کو معلوم ہوا کے مردے کی لاش کو زمین میں دفن کرنا چاہۓ .

چنانچہ اس نے قبر کھود کر اس میں بھاٸی کی لاش کو دفن کرو دیا 

قرآن مجید :  نے اس واقعہ کو اپنے لفظوں میں ارشاد فرمایا  ( پارہ ٦ ، الماٸدہّ ، ٣١ ) 

ترجمہ کنزالایمان  ( تو اللہ نے ایک کوّا بھیجا زمین کریدتا اسے دیکھاۓ کیونکر اپنے بھاٸی کی لاش چھپاۓ . بولا ہاے خرابی میں اس کوّے جیسا بھی نہ ہوسکا اپنے بھاٸی کی لاش کو چھپاتا پچتاتا  رہ گیا ) 

درس ہدایت :  اس واقعہ سے یہ سبق ملتا ہے کےآدمی علم سیکھنے میں چھوٹے سے چھوٹے استاد کا بلکہ یہاں تک کہ کوّے کا محتاج ہے 

اب تا قیامت جتنے مسلمان انتقال کریں گے ان کو زمین میں دفن کیا جاتا رہے گا یہ اللہ کی طرف سے کوّے نے سکھایا . 

ایک اور بات ذہن نشین کر لے تا قیامت جتنے بھی قتل ہوگے سب کے سب قابیل کے بھی حصے میں آئیں گے کیونکہ قتل کا سلسلہ اس نے شروع کیا ہے اب وہ بھی اس میں برابر کا شریک ہے