مَن و سلویٰ کا واقعہ

جب حصرت موسیٰ علیہ السلام چھ لاکھ بنی اسراٸیل کے افراد کے ساتھ میدان تیہ میں مقیم تھے تو اللہ تعالٰی نے ان لوگوں کے کھانے کے لیے آسمان سے دو کھانے اتارے .

qurani-waqiat-in-urdu-man-o-salwa-ka-waqia
qurani waqiat in urdu man o salwa ka waqia


ایک کا نام " مَن "    دوسرے کا نام ” سلویٰ“

” من “ بالکل  سفید شہد کی طرح ایک حلوہ تھا یا سفید رنگ کی شہد ہی تھی جو روزانہ آسمان سے بارش کی طرح برستی

” سلوٰی“  پکی ہوۓ بٹیریں تھیں جو دکھنی ہوّا کے ساتھ آسمان سے نازل ہوا کرتی تھیں

 اللہ تعالٰی نے بنی اسراٸیل پر اپنی ان نعمتوں کا شمار کرتے ہوۓ قرآن پاک میں ارشاد فرمایا کہ : 

 

وانزلناعلیکم المن والسلوی ( پ ١ ، البقرة : ٥٧ ) 

ترجمہ کنزالایمان :  ( اور تم پر مَن اور سلویٰ اتارا ) 


اس" من و سلوٰی" کے بارے میں حضرت موسیٰ علیہ السلام کا یہ حکم تھا کہ روزانہ اس کو کھا لیا کرو اور کل کے لیے ہرگز ہرگز اس کا ذخیرہ مت کرنا .

 مگر بعض ضعیف الاعتقاد لوگوں کو یہ ڈر لگنے لگا اگر کسی دن  " من و سلوٰی " نہ اترا تو ہم لوگ بے  آب وگیاہ چٹیل میدان میں بھوکے مر جاٸیں گے .

 چنانچہ ان لوگوں نے کچھ چپا کر کل کے لیے رکھ لیا تو نبی کی نافرمانی سے ایسی نحوست پھیل گٸی کہ  جو کچھ لوگوں نے کل کے لیے جمع کیا تھا وہ سب سڑ گیا اور آٸندہ کے لیے اس کا اترنا بھی بند ہو گیا 

 

اسی لیے حضور پاک ﷺ نے ارشاد فرمایا :

 کہ بنی اسراٸیل نہ ہوتے تو کھانا کھبی خراب نہ ہوتا اور نہ گوشت سڑتا , کھانے کا خراب ہونا گوشت کا سڑنا اسی تاریخ سے شروع ہوا .

 ورنہ اس سے پہلے نہ کبھی کھانا بگڑتا تھا اور نہ گوشت سڑتا تھا  ( کتاب عجاٸب القرآن  مع  غرٸب القرآن ص 33 ) 


اس قرآنی واقعہ سے ہمیں کیا سبق ملتا ہے :

انھوں نے بنی اسراٸیل کے لوگوں نے آپنے  نبی علیہ السلام کی نافرمانی کی تو ہمیشہ کے لیے اللہ کی دی ہوٸی پیاری نعمت ختم ہو گٸی 


مدنی آقا ﷺ کے امتی ہونے کے ناتے  ہم کیا کر رہے ہے ذرہ سوچیے

  جن جن باتوں سے ہمارے پیارے آقا ﷺ نے منع کیا ہے آج ہم بھی وہی تو نہیں  کر رہے ہیں ؟؟؟ 

سود ، ناپ تول میں کمی ، اپنے مسلمان بہن بھاٸیوں کو ایذا دینا ، دھوکہ دہی ، جھوٹ ، فریب ، چوری ، قتل ، شراب نوشی ، نمازیں قضا۶ کرنا ، روزے نہ رکھنا ، زکوة فرض ہونے کی صورت میں ادا نہ کرنا ، گانے باجے ، فلمے درمے ،  وغیرہ وغیرہ گناہوں میں پڑے ہوۓ ہیں  

اللہ پاک کی بارگاہ سچی توبہ کریں  اور مرنے سے پہلے آخرت کی تیاری کر لیں 

اللہ پاک ہم سب کو تمام صغیرہ کبیرہ گناہوں سے محفوظ کر اپنی رضا والے کام کرنے کی توفیق عطا۶ فرمائے آمین

اللہ پاک تمام مسلمانوں عشقان رسول ﷺ کی  بے حساب بخشش فرماۓ دنوں جہاں کی بھلایاں نصیب فرماۓ  حضرت آدم علیہ السلام  سے لے کر حضورﷺ امتی کلمہ گو  ایمان کی حالت میں آج تک چلے گیٸے اور قیامت تک جو ایمان والے آیے گے اللہ سب کی بھی بے حساب مغفیرت فرماۓ اور ہماری بھی  آمین آمین ثم آمین