توتھ برش کے نقصان ماہرین کی  تحقیق :

ماہرین کی  تحقیق کے مطابق( % 80 ) فیصد امراض معدے پیٹ اور دانتوں کی خرابی سے پیدا ہوتے ہیں عموماً دانتوں کی صفاٸی کا خیال نہ رکھنے کی وجہ سے مسوڑھوں میں طرح طرح کے جراثيم پرورش پاتے پھر معدے میں جاتے اور طرح طرح کے امراض کا سبب بنتے ہیں ( توتھ برش ) مسواک کا نعم البدل نہیں ہے بلکہ ماہرین نے اعتراف کیا ہے .

toothbrush-damage-teeth-toothbrush-damage-gums
toothbrush damage teeth toothbrush damage gums

کہ 

( 1 )   جب توتھ برش ایک بار  استعمال  کر لیا جاتا ہے تو اس میں جراثيم  کی تہ جم جاتی ہے پانی سے دھلنے پر بھی جراثيم نہیں جاتے بلکہ وہیں نشوونما پاتے رہتے  ہیں 

 ( 2 )  توتھ برش کے باعث دانتوں کی اوپری قدرتی چمکیلی اتر جاتی ہے .

( 3 )   توتھ برش کے استعمال سے مسوڑھے آہستہ آہستہ اپنی جگہ چھوڑتے جاتے  ہیں جس سے دانتوں اور مسوڑھوں کے درمیان خلا ( Gap ) پیدا ہوتا ہے اور اس میں غذا کے ذرّات پھنستے ، سڑتے اور جراثيم اپنا گھر بناتے ہیں اس سے دیگر بیماریوں علاوہ آنکھوں کے طرح طرح کے امراض جنم لیتے ہیں اس سے نظر کمزور ہو جاتی ہے بلکہ بعض اوقات آدمی اندھا ہو جاتا ہے( کتاب وضو اور ساٸنس ص6 )