حسد شیطان کا ہتھیار ہے

hazrat-nooh-ki-kashti-hassad-shaitan-ka-hathyar-hai
hazrat-nooh-ki-kashti-hassad-shaitan-ka-hathyar-hai

اپنے رب عزوجل کی نافرمانی کر کے شیطان خود تو تباہ وبرباد ہو چکا، اب وہ  دوسروں کی تباہی وبربادی کے درپے ہے اور حسد اس کا ایک اہم ہتھیار ہے ، چنانچہ

جب حضرت سیدنا نوح (علی نبینا وعلیہ الصلوۃ والسلام )  نے اپنی قوم پر پانی کا عذاب آنے سے پہلے بحکم خداوندی ہر جنس کا ایک ایک جوڑا کشتی میں سوار کیا اور خود بھی سوار ہوۓ تو آپ نے ایک اجنبی بوڑھے کو دیکھ کر پوچھا تمہیں کس نے کشتی میں سوار کیا ھے اس نے کہا : میں اس لیے آیا ہوں کہ لوگوں کے دلوں میں وسوۓ ڈالوں تا کہ اس وقت ان کے دل میرے ساتھ اور بدن اۤپ کے ساتھ ہوں آپ (علی نبینا وعلیہ الصلوۃ والسلام ) نے ارشاد فرمایا :" اللہ عزوجل کے دشمن ! سفینے سے اتر جا کیونکہ تو مردود ہے" تو شیطان نے کہا : " میں لوگوں کو پانچ چیزوں سے ہلاکت میں ڈالتا ہوں تین چیزیں تو آپ (علی  نبینا وعلیہ الصلوۃ والسلام ) کو ابھی بتا سکتا ہوں مگر دو نہیں بتاؤں گا "اللہ عزوجل نے حضرت سیدنا نوح (علی  نبینا وعلیہ الصلوۃ والسلام ) کی طرف وحی فرمائ :" آپ اس سے کہَے کہ مجھے تین سے آگاہی کی ضرورت نہیں تو مجھے صرف وہی دو بتا دے " شیطان کہنے لگا وہ دو ایسی ہیں جو مجھے کبھی جھوٹا نہیں کرتیں اور نہ ہی کبھی ناکام لوٹاتی ہیں اور انہیں سے میں لوگوں کو تباہی کے دہانے پر کھٹرا کرتا ہوں

ان میں سے ایک حسد ہے اور دوسری حرص  اسی حسد کی وجہ سے تو میں راندہ درگاہ اور ملعون ہو ہون اور حرص کے باعث آدم ( علیہ السلام ) کو ممنوعہ چیز کی خواہش پیدا ہوئ  اور میرا وار کامیاب ہوگیا                 دعوت اسلامی کی کتاب حسد ص 22 پر ہے