اسلام میں فٹنس کی کیا اہمیت ہے ؟

fitness-quotes-islam-and-fitness
fitness-quotes-Islam-and-fitness

اسلام میں فٹنس کی اہمیت یہ ہے . کہ حدیث میں فرمایا کہ
جو قوت و طاقت والا مومن
وہ اللہ کی بارگاہ میں کمزور مومن سے زیادہ پسندیدہ ہے تو لہذا صحت مند ہونا یہ پسندیدہ چیز ہے صحت اللہ تعالی کی نعمت ہے صحت کوغنیمت جاننے کا فرمایا کہ بیماری سے پہلے صحت کو غنیمت جانو پھر صحت کی وجہ سے بہت سارے اعمال اور بہت سی عبادات باآسانی ہو سکتی ہیں ایک آدمی اگر ساری رات نماز پڑھنا چاہیے تلاوت کرنا چاہے وہ دن میں روزہ رکھنا چاہے تو ان میں سے بہت سی عبادات کا تعلق صحت سے ہے اسی طرح حج ہے نفلی حج ہے عمرے ہیں ان ساری عبادتوں کا تعلق بھی صحت سے ہے اسی طرح تبلیغ دین ہے دین کے لئے بھاگ دوڑ کرنا ہے دوسروں کی خیر خواہی کے لیے اگر باہر جانا پڑے بازار جانا پڑے رشتے داروں کے پاس جانا پڑے تو اس طرح کے کسی امور ہے کہ جن کا تعلق انسان کی صحت کے ساتھ ہے تو لہذا صحت جو ہے یہ بیماری پر ترجیح رکھتی ہے اور صحت کے ساتھ بہت سی نیکیان وابستہ ہے تو لہذا صحت یہ اللہ تعالی کو پسندیدہ ہے اب یہاں پر اس کے ساتھ ایک اور چیز بھی ہیں کہ فٹنس کے نام پر بہت کچھ ہوتا ہے فٹنس کا مطلب صرف صحت نہیں ہوتا فٹنس کا مطلب تھوڑے سا اپنے مسلز غیر بنانا ہے وہ جسم بنانا تھوڑے سے اپنے بدن کے پرکشش بنانا اور اس طرح کی چیزیں اس میں اور بہت سی چیزیں آجاتی ہیں اب اس میں کوئی اچھی نیت ہو تواس میں کوئی غلط بات نہیں ہے ٹھیک ہے اور اگر کوئی بری نیت ہے تو اس کے اپنی نیتوں کی اپنی فساد کے اعتبار سے اس پر حکم ہوگا تو یہ جو اس طرح کا معاملہ ہے کہ فٹنس کے نام پہ یہ جو ورزش کی جاتی ہے ورزش کرنا جائزہ ہے اور نیت اچھی ہو تو ثواب بھی ملے گا مگر یہ ہے کہ بےپردگی ہے یعنی کہ گھٹنے ننگے ہیں اور اس میں کچھ حصہ رانونے ننگی ہیں یہ پھر ٹھیک نہیں اسی طرح ان چیزوں کی وجہ سے نماز قصا ہو جاتی ہے یا دیگر ضروری شرح احکام میں تاخیر ہو جاتی ہے تو پھر اس کا وبال ہوگا لیکن وہ خارجی امور کی وجہ سے ہے فی نفسی ہی فٹنس یا ورزش ان کی وجہ سے نہیں تو لہزا یہ اچھی نیت سے اور یہ اچھےمقصد کے لیے ہونی چاہیے
مبلغ دعوت اسلامی ۔ مفتی قاسم عطاری